poribaatnation2750-2 248

نوازشریف نے اپنا انتقام لیا یا حقیقت کچھ اور-جانئیے پوری بات

کچھ لوگ دل کی بات چھپا نہیں سکتے، جو دل میں ہے وہی صاف آپ ان کے چہرے سے پڑھا جا سکتا ہے-
سپریم کورٹ کی جانب سے نواز شریف کی نااہلی کے بعد جو غصہ ان کے چہرے سے نظرآتا تھا وہ اب اعتماد میں اضافے اور اطمینان کے جذبات سے لبریز دکھائی دے رہا تھا۔ مسلم لیگ ن کی صدارت بلامقابلہ جیت کر انھوں نے اپنے مخالفین کو ایک سیاسی ’چپت‘ ضرور رسید کی ہے۔
پارٹی کی حمایت سے سرشار نواز شریف نے اتنخابی ترمیم کے ذریعے اپنے بڑے سیاسی حریف اور سابق فوجی آمر جنرل پرویز مشرف کو بقول ان کے منہ پر ان کا سنہ 2000 میں بنایا گیا قانون دے مارا ہے۔
نواز شریف کا کہنا تھا کہ” یہ قانون انہیں سیاست سے باہر رکھنے کے لیے بنایا گیا تھا۔” ان کی باتوں سے ایسا لگ رہا تھا کہ جیسے نواز شریف نے انتقام لے ہی لیا۔ نواز شریف کی مسرت کا اظہار ان کی جانب سے بھی سیاسی شعر پڑھ کر ہوتا تھا۔
نواز شریف ’شیر آیا، شیر آیا‘ کے نعروں میں داخل ہوئے تو ایسا لگا جیسے وہ کئی مرتبہ آؤٹ ہونے کے بعد اب دوبارہ ایک نئی اننگز کھیلنے میدان میں اترے ہیں۔
مسلم لیگ ن کے پاکستان بھر سے آئے اراکین اور سینیئر رہنماؤں اور اراکین پارلیمان سے کھچا کھچ بھرے کنونشن سینٹر میں جماعت کے الیکشن کمشنر چودھری جعفر اقبال نے باضابطہ طور پر ان کی جیت کا اعلان کیا۔
یہ اعلان صدر مملکت ممنون حسین کی جانب سے کل رات گئے انتخابی ترمیم کے بل پر توثیق کے دستخط کی سیاہی کے خشک ہونے سے قبل ہی کر دیا گیا۔
پارٹی کارکنوں میں سے ایک نے کہا کہ ’اگر نواز شریف نہیں تو مسلم لیگ نہیں‘۔

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں