غیر مسلموں کے حقوق اسلام کی نظرمیں

:غیر مسلموں کے حقوق اسلام کی نظرمیں

ضروری نہیں کہ اسلامی ریاست کی تمام آبادی مسلمان ہی ہو-اس میں لازما کچھ غیر مسلم بھی ہوں گے چنانچہ اسلام نے مسلموں کی آزادی برقرار رکھتے ہوئے ان کے حقوق پر بھی زور دیا جن میں سے چند ایک یہ ہیں

:معاھدات کی پابندی

مسلمان حکومت کا کسی غیر مسلم حکومت کے ساتھ یا غیر مسلموں کے ساتھ کوئی معاہدہ ہو تو اس کو نبا ہنا عوام کا فرض ہے -حدیث نبوی میں ہے : جو مسلمان کسی معاہدہ کرنے والے غیر مسلم پر ظلم کرے گا یا اس کا حق غصب کرے گا یا اس کی طاقت سے زیادہ بوجھ ڈالے گا یا اس کی چیز جبرلے گا تو خدا کی عدالت میں اس مسلمان کے خلاف غیر مسلم کا وکیل بنوں گا -اسلئے معاہدات کی پابندی مسلمانوں کے شایان شان ہے –

:مذہبی آزادی

غیر مسلم رعایا کو ان کے مذہب کے مطابق عبادت کی آزادی حاصل ہو گی- ان کو زبردستی مذہب تبدیل کرنے پر مجبور نہیں کیا جائے گا -قرآن مجید میں ہے : ترجمہ: دین میں کوئی جبر نہیں ہے – مسلمان ان کے مذہب میں مداخلت نہیں کریں گے بلکہ نبی نے ایک دفعہ عیسائیوں کو مسجد نبوی میں عبادت کی اجازت دے دی تھی- غیر مسلموں کی مذہبی آزادی اسلام کا امتیاز ہے-

:تحفظ عزت

غیر مسلموں کی عزت کی حفاظت کی جائے اور اس حفاظت کی ضمانت حکومت کی طرف سے دی جائے جب کہ اسلامی معاشرہ بھی غیر مسلموں کی تحفظ عزت کا ضامن ہے- جس سے اسلامی معاشرے کا وقار بلند ہوتا ہے – نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے غیر مسلموں کی عزت کا حکم دیا ہے اور مسلمانوں نے اس پر عمل کر کے دکھایا-

Facebook Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں