Thinking Lucky - Jacqueline Fernandez 22

اپنے آپ کو خوش قسمت سمجھتی-جیکلین فرنانڈیز

بالی وڈ کی اداکارہ جیکلین فرنانڈیز کا کہنا ہے کہ اگر آپ کا خود کا رویہ صحیح ہے تو پھر فلم انڈسٹری آپ کے لیے محفوظ جگہ ہے۔
فلم ‘کِک’، ‘رؤئے’ اور ہاؤس فُل’ کی سیریز میں کام کرنے والی سری لنکا سے تعلق رکھنے والی اداکارہ جیکلین فرنانڈیز نے بالی وڈ میں اپنے 8 برس پورے کر لیے ہیں۔
فلم انڈسٹری کے باہر سے آنے والی بیشتر اداکاروں کا کہنا ہے کہ فلم انڈسٹری میں دوست بنانا بہت مشکل ہو جاتا ہے جیکلین نے اس موقف کی حمایت نہیں کی۔
وہ کہتی ہیں: ‘فلم انڈسٹری میں دوست بنانا آسان ہے۔ آپ کی پریشانیاں، فکر، عدم تحفظ اور جد و جہد سب ایک ہی جیسی ہوتی ہیں جس پر آپ ایک دوسرے سے بات کر سکتے ہیں۔’
جیکلین اپنے آپ کو خوش قسمت سمجھتی ہیں کہ انھیں بہترین انسانوں کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملا۔ ان کا کہنا ہے کہ فلمی صنعت سے تعلق رکھنے والے افراد جب کسی مشکل یا تنازع سے گزر رہے ہوتے ہیں تو انھیں اس سے بہت تکلیف ہوتی ہے۔

Thinking Lucky - Jacqueline Fernandez
Thinking Lucky – Jacqueline Fernandez
Thinking Lucky - Jacqueline Fernandez
Thinking Lucky – Jacqueline Fernandez
Thinking Lucky - Jacqueline Fernandez
Thinking Lucky – Jacqueline Fernandez

جیکلین کا خیال ہے کہ فلمی خاندان سے وابستہ لوگوں کی سمجھ بوجھ بہت بہتر ہوتی ہے اور انھوں نے فلم انڈسٹری میں بہت سے دوست بنائے ہیں جس میں سلمان خان، سونم کپور، تاپسی پنوں، سدھارتھ ملہوترا اور دھون فیملی شامل ہیں۔
اداکاروں سے توقع کی جاتی ہے کہ ان میں اعتماد کی ہرگز بھی نہ ہو لیکن ایک فنکار کے طور پر جیکلین نے یہ بات تسلیم کی کہ کئی بار ان میں اعتماد نہیں ہوتا ہے اور ان کی ہندی زبان بھی کمزور ہے جس پر وہ کام کر رہی ہیں۔
گذشتہ برس جیکلین کی ٹائیگر شروف کے ساتھ آنے والی سوپر ہیرو فلم ‘فلائنگ جٹ’ مبصرین کو پسند آئی اور نہ ہی ناظرین کو۔
اس فلم کی ناکامی پر وہ کہتی ہیں: ‘بطور آرٹسٹ ہم ایک پاؤں پر کھڑے ہوتے ہیں۔ کون سی فلم سائن کریں اور کون سی نہیں، کون سی فلم چلے گی اور کون سی نہیں، کیوںکہ اب فلم شائقین بدل چکے ہیں۔ انھیں اب نئی قسم کی کہانیاں چاہیں۔ فارمولا فلمیں ناظرین پہلے ہی مسترد کر چکے ہیں۔’
انہوں نے مزید کہا: ‘جن فلموں سے امید کی جا رہی ہے کہ وہ حیرت انگیز طور پر اچھا کریں گی وہ ایسا کرنے میں ناکام ہو رہی ہیں۔ ناظرین سے جو فلم دیکھنے کی امید کی جا رہی ہے وہ نہیں دیکھ رہے۔ ہم فنکاروں کے لیے بھی فلموں کا انتخاب مشکل ہو گیا ہے کیوںکہ آپ کو سمجھ میں نہیں آتا کہ کون سی فلم چلے گی اور کون سی نہیں۔’

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں